Global Research of Anayatullah See here

 (1)٭٭مجال نہ تھی ! مگر ۔۔۔۔۔۔


(2)٭٭آئینہ وقت دکھلاؤں تجھے؟

(3)٭٭دین کی روشنی میں ملت اسلامیہ کی کردار سازی کا آغاز


(4)٭٭جمہوریت کی اکیڈمی کا جاگیردار اور سرمایہ دار طبقہ کالے انگریز۔کالا نظام ، کالا سسٹم


(5)٭٭سرزمین وطن ، کسان، محنت کش، ہنر مند، اور مظلوم عوام


(6)٭٭علمائے دین اور مشائخ کرام کا جمہوریت پسند تصور اوراسکاامت محمدی کے کریکٹرو کردار پر اثرات


(7)٭٭جمہوریت اور اس کا طبقاتی مروجہ تعلیمی نظام


(8)٭٭جمہوریت کالے انگریز وں کی کالی انتظامیہ کالی افسر شاہی


(9)٭٭انگریز کے ۱۸۵۷ء کے قائم کردہ عدل و انصاف کے کالے ادارے اور ان کے کالے منصف


(10)٭٭1947 کے طلباء کو خراج عقیدت اور ان کا پیغام آج کے دور کے طالب علموں کے نام !

(11) ٭٭اہل پا کستان مسلمانوں کو جمہوریت کا کینسر


(12)٭٭پاکستان ایک دینی ریاست ہے ۔ اسلام اس کا دین ہے ۔ اردو اس کی قومی زبان ہے ۔ ملت کا المیہ۔ سرکاری مذہب جمہوریت۔ سرکاری زبان انگریزی ۔ قومی تشخص کفر نگری۔ ملکی نظام ۱۸۵۷ ء کے ایکٹ ۔ معاشیات سودی یہودی معاشی نظام ۔ معاشرہ ۔ برہمن ۔ کھتری ۔ کھشتری اور شودر ۔


(13)٭٭یہودیت ، عیسائیت، اور اسلام کی روشنی میں عورت کا مقام اور دستور مقدس پر جمہوریت کے بے دین مذہب کے سیاست دانوں،دانشوروں اور حکمرانوں کے آزادیء نسواں کے نام پر اسلام کش حملے


(14)٭٭دور حاضر کے فرعونوں کو حضرت مو سیٰ علیہ السلام کا خوف، اس کی تلاش اوربیگناہ مخلوق خدا کاقتل عام


(15)٭٭جمہوریت کے الیکشن۔ اسمبلیوں میں مستورات کا آزادی ء نسواں کے تحت اضافی کوٹہ۔ قومی سانحہ۔ملت اسلامیہ کی دین کے ساتھ کھلی جنگ


(16)٭٭پاکستانی مسلمان، ملو کیت کے نظام اورسسٹم کی زد میں ۔ شہدائے کربلا کے بنیادی مشن ،عظیم قربانی، بے مثال کردار کی بے حرمتی کے مجرم


(17)٭٭ابتدائیہ چراغِ وقت


(18)٭٭ اللہ تعالیٰ ما لک الملک ہیں


(19)٭٭شورائی نظام انتخاب جو جمہوریت کی اصل روح ہے ۔جسکے ذریعہ اللہ تعالیٰ کی حاکمیت قائم کی جاتی ہے۔


(20)٭٭بنی نوع انسان اور مخلوق خدا کی نجات کا راستہ پیغمبران کا راستہ ہے

(21)٭٭پیغمبران رشد و ہدایت کا چشمہ ہیں


(22)٭٭مذہب کی صداقتوںاور جمہوریت کی صداقتوں کا تضاد


(23)٭٭۱یٹم بم،اورایٹمی میزائل انسانیت کو فتح کرنے کے ہتھیار نہیں بلکہ انسانیت کا ادب،خدمت اور محبت فا تح عالم ہیں۔


(24) ٭٭یزید کے دین کش نظریات اور ضابطہ حیات کے خلاف حسینی قافلے کی آواز حق


(25) ٭٭ دین محمدی،جمہوریت اور بادشاہت کا مختصرجائزہ اورتجزیہ


(26) ٭٭ جمہوریت کی طرز حکومت کا مختصر جائزہ


(27) ٭٭جمہوریت سے وابسطہ عالم دین،مشائخ کرام او ر مذہبی پیشوا ؤں کا دین کش کرداراور جمہوریت کے نظریات کی پیروی۔


(28)٭٭تمام پیغمبران کے نظریات اور الہامی تعلیمات کو جمہوریت کے سیاست کے دجال نگلتے جا رہے ہیں۔


(29) ٭٭ ایک لاکھ چوبیس ہزار پیغمبران کی توحید پرستی کی تبلیغ۔ساری خدائی کنبہ خدا کا تصوراورچار الہامی صحیفے۔


(30) ٭٭ تمام امتیں اور پوری انسانیت پیغمبران اور مذاہب کی دوری کی سزا میں مبتلا ہو چکی ہیں۔

(31) ٭٭یہودیت،عیسائیت اور مسلم امہ مذاہب کے منافقوں اور منکروں کی گرفت میں۔


(32)٭٭مذہب کی اطاعت انسان کو معصوم اور انسانیت کیلئے بے ضرر بلکہ منفعت بخش بنا دیتی ہے۔


(33) ٭٭مذہب کے نظریات،الہامی ،روحانی،ظاہری ،باطنی انسانیت کی رہنمائی کے چراغ ہیں۔


(34) ٭٭ مذہب کی تعلیمات کی روحانی قندیلیں۔


 (35)٭٭پردہ اور شرم و حیا تما م مذاہب کا ایک بنیادی عنصر ہے


(36)  ٭٭پاکستان کا سیاسی اور معاشی نظام۔


(37)٭٭انسان،اقوام،عقائد،نظریات اور مذاہب ایک دوسرے کے گلے مل چکے ہیں۔


(38)٭٭دین کے نظریات کی دیوار کو توڑنے والے کون ہیں۔


(39)٭٭جب دامن دین ہی ہاتھ میں نہ ہو تو اسلام کیسا اور مسلمان کیسے


(40) ٭٭ پاکستان کے معرض وجود میں آنے کی وجوہ اور محرکات

 (41) ٭٭ پاکستان دو بنیادی نظریات کی روشنی میں معرض وجود میں آیا


(42)٭٭ پاکستان اسلامی نظریات کی بجائے مغربی اینٹی کرسچن جمہوریت کے نظریات کی تربیت گاہ بن چکا ہے۔


(43)٭٭ مغربی پاکستان پلس مشرقی پاکستان مساوی موجودہ پاکستا ن


(44)٭٭حکمرانوں،سیاستدانوں اور انکے اعلیٰ عہدیداروں کے سرکاری سفر اور انکے اخراجات اور اصل محرکات


(45)٭٭اینٹی کرسچن جمہوریت کے پجاریوں کے نام ایک اہم پیغام


(46)٭٭ جمہوریت کے منہ زور،طاقتو ر استحصالی طبقہ نے مسلم امہ کو کرسچن جمہوریت کی تقلید کا پابنداور قیدی بنا رکھا ہے۔


(47)٭٭پاکستان میں مسلم امہ کی نسلوںکو جمہوریت کا کینسر،دین محمدی ملت کو وحدت خیال عطا کرتا ہے،دین کوایک ایسے عادل کی ضرورت ہے جو ملت کو وحدت کا لباس عطا کر ے اور اینٹی کرسچن جمہوریت کے جمعیت کش نظام حیات سے ملت کو نجات دلائے


(48) ٭٭ مسلم امہ کی نسلوں کو جمہوریت کا کینسر


(49)٭٭جمہوریت کے عدل و انصاف کے ادارے اعتدال و مساوا ت کوکچل دیں ۔ اور اقوام عالم کی یو این او کی عدالت بھی دنیا میں عدل کچلتی جائے ۔معاشرہ کو پاکیزہ ماحول اور عمدہ صفات ہی مہیا نہ کی جائیں تو دنیا میں امن قائم کیسے ہو سکتا ہے۔


(50)٭٭ اینٹی کرسچن جمہوریت نے ادب آد میت اور احترام آدمیت کے بنیادی حقوق کو مسخ کر دیا ہے۔

(51)٭٭عدل ہی کسی ملک یاملت کے نظریات،ضابطہ حیات اور تعلیمات کے حصول کا ثمر ہوتا ہے۔


(52) ٭٭ اینٹی کرسچن جمہوریت کے سیاسی دانشوروں سے دین محمدی  کی آزادی کو حاصل کرنے کا وقت آن پہنچا ہے۔


(53)٭٭ہندوستان کے عوام کا بنیادِی نظریہ ہندو ازم تھا،وہ ایک ہی نسل کے لوگ ہیں، ذ ہن ہندی،پوجا پاتِ بتاں انکا ورثہ ہے۔ اسلام قبول کرنے کے بعد فقیرو ں، درویشوں کا ادب ، عشق رسول ان کا نصیب بن کر ابھرا۔ جسکو مغربی جمہوریت کے ضابطہ حیات نے نگل لیا ہے ۔


(54) ٭٭بادشاہت ہو یا آمریت،ملو کیت ہو یا جمہوریت یہ تمام نظام بنی نوع انسان سے اعتدال و مساوات اور مذہب کی تعلیمات چھین لیتے ہیں۔


(55) ٭٭اے انبیا ء علیہ السلام کی امتوںکے سیاسی رہنماؤ !کیا تم ان انبیا علیہ السلام کو مانتے ہو! انکی ا لہا می کتابوں پر ایمان رکھتے ہو!کیا یہ حقیقت نہیں کہ اینٹی کرسچن جمہو ر یت کے سیاستدان ،مذہبی جما عتوں کے سیاسی رہنما ، ملک کے حکمران مذہبی نظریا ت اور تعلیمات کو ایک دجال کی طرح کچلتے جا ر ہے ہیں !


 (56)٭٭جمہوریت ۔ حکومتی اسمبلیوں کے آمر ممبران اور آمر حکمران پیدا کرتی ہے۔ دین محمدی! ۔ صاحب بصیرت، صاحب کردار، اعتدال و مساوات کے عارف ،ادب جہاں کے وارث،اخوت و محبت کے پیکر ، خلق عظیم کے پیامی،دنیا کی بے ثباتی کے آشنا،خوف خدا کی دولت سے مالا مال اور اللہ تعالیٰ کی حاکمیت قائم کرنے و الے افراد مہیا کرتا ہے ۔


(57)٭٭انبیاء اکرام کے الہا می، آسمانی،نورانی دینی ضابطہ حیات پر فرعون اور یزیدکے جمہوریت کے نظام اور سسٹم کے قوانین کی بالا دستی۔۔۔۔انسانیت کا المیہ


(58)٭٭پیغمبران کے نظریات کی تعلیمات کے چراغ روشن کرو۔ انسانیت کو امن و سکون اور مہر و محبت کا لا متناہی خزانہ میسر ہو گا۔


(59)٭٭ مشرق وسطٰی، کشمیر، کوسو وا،بوسینیا، انڈونیشیا، ا یران ،عراق ، افغانستان جیسے غیر ترقی یافتہ اسلامی ممالک کے عوام کا بے پناہ قتال۔جمہوریت کے مذہب کش مغربی ترقی یافتہ اقوام کے فرعونی دہشت گردوں کی مسلم امہ پر یلغار۔



(60)٭٭ اس جہان رنگ و بو کی تہذیبی عمارت میں مذاہب کی روشنیاں۔ فرعون اور یزید کے نظریات پر مشتمل جمہوریت کی تعلیم و تربیت کے ظلمت کدہ میں گم ہو چکی ہیں۔

(61)٭٭ جمہوریت کے نظریات اور تعلیمات کا فتنہ ۔اور اس کی دنیائے عالم کے مما لک پر سرکاری بالادستی۔نمرود،فرعون اوریزید کی معبد،کلیسا اور مسجدپر حکمرانی۔


(62)٭٭ پاکستان سولہ کروڑ مسلم امہ کا ملک ہے، اسلام کے نام پر حاصل کیا تھا۔
ٌٌٌٌٌٌٌ